Jaun Elia

جون ایلیا

چاہتا ہوں کہ بھول جاؤں تمہیں

اور یہ سب دریچہ ہائے خیال


جو تمہاری ہی سمت کھلتے ہیں

بند کر دوں کچھ اس طرح کہ یہاں


یاد کی اک کرن بھی آ نہ سکے

چاہتا ہوں کہ بھول جاؤں تمہیں


اور خود بھی نہ یاد آؤں تمہیں

جیسے تم صرف اک کہانی تھیں


جیسے میں صرف اک فسانہ تھا


www.000webhost.com