Jaun Elia

جون ایلیا

مجھے غرض ہے مری جان غل مچانے سے

نہ تیرے آنے سے مطلب نہ تیرے جانے سے


عجیب ہے مری فطرت کہ آج ہی مثلاً

مجھے سکون ملا ہے ترے نہ آنے سے


اک اجتہاد کا پہلو ضرور ہے تجھ میں

خوشی ہوئی ترے نا وقت مسکرانے سے


یہ میرا جوش محبت فقط عبارت ہے

تمہاری چمپئی رانوں کو نوچ کھانے سے


مہذب آدمی پتلون کے بٹن تو لگا

کہ ارتقا ہے عبارت بٹن لگانے سے



www.000webhost.com