Jaun Elia

جون ایلیا

آدمی وقت پر گیا ہوگا

وقت پہلے گزر گیا ہوگا


وہ ہماری طرف نہ دیکھ کے بھی

کوئی احسان دھر گیا ہوگا


خود سے مایوس ہو کے بیٹھا ہوں

آج ہر شخص مر گیا ہوگا


شام تیرے دیار میں آخر

کوئی تو اپنے گھر گیا ہوگا


مرہم ہجر تھا عجب اکسیر

اب تو ہر زخم بھر گیا ہوگا



www.000webhost.com